ماہ صیام کے آغاز کے موقع پر امریکہ کے وزیر خارجہ مائک پومپیو نے اپنے ایک بیان  میں کہا ہے کہ وہ  دنیا بھر کے مسلمانوں کو امن اور رمضان المبارک کی  برکتوں کے لیے دعاگو ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ رمضان   کا مہینہ  ادب و احترام، فیاضی و سخاوت اور روحانی مشاہدہ نفس کا وقت ہے۔  رمضان المبارک کمیونٹی سے محبت بانٹے کا بھی مہینہ ہے اور اکثر و بیشتر  اس مہینے میں  خاندان اور دوستوں سے دوبارہ  رابطے بحال کیے جاتے ہیں۔   یہ مہینہ مسلمانوں کو یہ درس دیتا ہے کہ وہ ان لوگوں کی مدد کریں جو کم خوش نصیب ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ اور دنیا بھر میں مسلمان  اس مہینے کے دوران ہر روز اپنے معاشروں کے لیے عطیات دیں گے  اور لاکھوں افراد  خدمت اور اپنے ہمسائیوں کو کچھ لوٹانے کے لیے خصوصی انداز میں کام کریں گے۔ اس ماہ کے دوران ہر سال دنیا بھر میں ہمارے بہت سے سفارت خانے اور قونصل خانے   مسلمانوں اور دوسرے عقائد سے تعلق رکھنے والے افراد کو اکھٹا کرنے کے لیے  خصوصی تقریبات منعقد کرتے ہیں  جو امن ، استحکام اور خوشحالی  کی منزل کے حصول کے ہمارے عہد سے وابستہ ہیں۔ اس طرح کی تقریبات اور  اشتراک  ہماری سفارت کاری ، شرکت داری کے ذریعے  مضبوط کمیونیٹز  کے لیے راستہ ہموار کرنے اور تنوع کے احترام   کے کلیدی  پہلوؤں میں شامل ہیں۔ میں اس ماہ کے آغاز کے موقع  پران سب کے لیے ایک بہت خوش کن اور خوشحال رمضان کریم  کی  خواہشات کا اظہار کرتا ہوں ۔

رمضان المبارک کے موقع پر امریکی وزیر خارجہ مائل پومپیو کا پیغام

ماہ صیام کے آغاز کے موقع پر امریکہ کے وزیر خارجہ مائک پومپیو نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ دنیا بھر کے مسلمانوں کو امن اور رمضان المبارک کی برکتوں کے لیے دعاگو ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ رمضان کا مہینہ ادب و احترام، فیاضی و سخاوت اور روحانی مشاہدہ نفس کا وقت ہے۔ رمضان المبارک کمیونٹی سے محبت بانٹے کا بھی مہینہ ہے اور اکثر و بیشتر اس مہینے میں خاندان اور دوستوں سے دوبارہ رابطے بحال کیے جاتے ہیں۔ یہ مہینہ مسلمانوں کو یہ درس دیتا ہے کہ وہ ان لوگوں کی مدد کریں جو کم خوش نصیب ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ اور دنیا بھر میں مسلمان اس مہینے کے دوران ہر روز اپنے معاشروں کے لیے عطیات دیں گے اور لاکھوں افراد خدمت اور اپنے ہمسائیوں کو کچھ لوٹانے کے لیے خصوصی انداز میں کام کریں گے۔ اس ماہ کے دوران ہر سال دنیا بھر میں ہمارے بہت سے سفارت خانے اور قونصل خانے مسلمانوں اور دوسرے عقائد سے تعلق رکھنے والے افراد کو اکھٹا کرنے کے لیے خصوصی تقریبات منعقد کرتے ہیں جو امن ، استحکام اور خوشحالی کی منزل کے حصول کے ہمارے عہد سے وابستہ ہیں۔

اس طرح کی تقریبات اور اشتراک ہماری سفارت کاری ، شرکت داری کے ذریعے مضبوط کمیونیٹز کے لیے راستہ ہموار کرنے اور تنوع کے احترام کے کلیدی پہلوؤں میں شامل ہیں۔

میں اس ماہ کے آغاز کے موقع پران سب کے لیے ایک بہت خوش کن اور خوشحال رمضان کریم کی خواہشات کا اظہار کرتا ہوں ۔

Leave a Reply

x

Check Also

کیا افغان صوبے فرح پر طالبان کے حملے میں ایران کا کردار تھا

کچھ ماہرین یہ الزام لگاتے ہیں کہ ایران ترقیاتی منصوبوں میں رخنہ ڈالنے کے لیے طالبان کی مدد کر رہا ہے، جن میں ایک ڈیم بھی شامل ہے۔ کیونکہ ڈیم کی تکمیل سے ایران کی جانب پانی کا بہاؤ کم ہو سکتا ہے۔

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow