پنڈدادنخان ،نٹرومی ڈھن واٹر سپلائی سکیم کے دونوں فیز ون اور ٹو کئی سالوں سے مکمل ہونے کے باوجود ناکام ہو چکے ہیں ۔برگیڈئیر (ر) چوہدری مشتاق احمد

پنڈدادنخا ن (ملک ظہیر اعوان )ہمیں صر ف دعو ے اور کھو کھلے نعر ے نہیں عملی کا م چا ہیے ،تحصیل پنڈدادنخا ن کے میگا پرا جیکٹ نٹرومی ڈھن واٹر سپلائی سکیم کے دونوں فیز ون اور ٹو کئی سالوں سے مکمل ہونے کے باوجود ناکام ہو چکے ہیں اور32دیہاتوں کو پانی مہیا نہیں کیا جا رہا،صرف چھ ،سات دیہاتوں کو ناکافی اور مضر صحت پانی مل رہا ہے بلکہ محکمہ پبلک ہیلتھ پنڈ دادنخان اور جہلم کے اہلکاروں نے سردھی چشمہ سے لیا گیا کڑوا پانی اس میں مکس کر دیا ہے ،جس سے پیٹ کی بیماریاں پھیل رہی ہیں ،جبکہ فیز تھری سے صرف ٹوبھہ ،سروبہ ،بھیلووال اور گولپور وغیرہ کے ڈیرہ جات اور ڈھوکیں مستفید ہوں گی پانی کے اس ناکام ترین اور کرپشن زدہ منصوبے کو32دیہاتوں کو پانی ملنے کا دعوی نہ کیا جائے ان خیالات کا اظہار برگیڈئیر (ر) چوہدری مشتاق احمد لِلہ نے گفتگو کرتے ہوئے کیا انھوں نے کہا کہ810ملین روپے تو نئی سکیم پر خرچ ہوئے ہوں گے جو پیسہ اس کی مرمت کے نام پر لگایا جا چکا ہے اس کے اعدادو شمار کے بارے میں بھی قوم کو آگاہ کیا جائے اب جو سردھی اور ملکانہ چشمے پر کروڑوں روپے لگا کر غرق کئے جا رہے ہیں اس کا حساب بھی دیا جائے ان دونوں چشموں کے پانی کو چند کلو میٹر کے فاصلہ پر عمران سالٹ مائن کے قریب سے ہی نٹرومی ڈھن کی مین پائپ لائن میں ڈالا جاتا تو دونوں فیز کے پانی میں اضافہ ممکن تھا ، ، تقریباً دس کلو میٹر لمبی چھ یا آٹھ کی پائپ لائن کو پیر کھارا شریف کے مقام پر آ کر نٹرومی ڈھن کی مین پائپ لائن میں ڈالنے کی منطق سمجھ نہیں آ رہی محکمہ پبلک ہیلتھ انجئیرنگ پنڈ دادنخان اور جہلم ہم عوام کے ساتھ کیا کھیل کھیل رہا ہے ضلع جہلم انتظامیہ کو بھی اس سارے منصوبے کو سمجھنا ہو گا ورنہ مزید کروڑوں روپے برباد ہو جائیں گے ۔

x

Check Also

جہلم شہر و گردونواح کے سرکاری و نجی تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم بچے اور بچیاں صاف پانی سے محروم

جہلم(چوہدری عابد محمود +عامرکیانی)جہلم شہر و گردونواح کے سرکاری و نجی تعلیمی اداروں میں زیر ...

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow