ضلع بھر کے بھٹہ مالکان نے ایک بھٹے پربھی مزدوروں کی مقررہ اجرت ادا نہیں کی جارہی۔بھٹہ مزدور تحریک ضلع جہلم

جہلم(چوہدری عابد محمود +عامرکیانی)جہلم بھٹہ مزدور تحریک ضلع جہلم کے عہدیداران نے منعقدہ اجلاس میں کہا ہے کہ حکومت نے فی ہزار کی اجرت 1110 روپے مقرر کی ہے مگر ضلع بھر کے بھٹہ مالکان نے ایک بھٹے پربھی مزدوروں کی مقررہ اجرت ادا نہیں کی جارہی ، بھٹہ مزدوروں کے بچوں کی تعلیم کے نام پر حکومت پنجاب کو سواپانچ ارب روپے کا پراجیکٹ ملا جو فلاح وبہبود پر خرچ ہونا تھا مگر مزدوروں کے نام پر ملنے والی امدادمیں بھی خردبرد کرپشن کی گئی جس کی وجہ سے ہزاروں بھٹہ مزدو ر خدمت کارڈ سے محروم ہیں ، سی ای او جہلم نے بچوں کی کتابوں ، کاپیوں ، سکول یونیفارم تک فراہم نہیں کی گئیں ، بھٹہ مزدوروں کے بار بار انکشاف کے باوجود ضلعی افسران نے کسی قسم کی کارروائی نہیں کی جو کہ سوالیہ نشان ہے ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مزدور رہنماؤں کا کہنا تھا کہ حکومت پنجاب ، محکمہ لیبر ہمارے مسائل کی اصل وجہ ہیں ، چائلڈ لیبر اور نام نہاد پیشگی کے خاتمے کے لئے چائلڈ آرڈیننس 2016ء کو ضلعی افسران نے ہوا میں اڑا دیا ہے ، ضلعی انتظامیہ و لیبر ڈیپارٹمنٹ اس آرڈیننس پر عملدرآمد کرانے میں مجرمانہ غفلت کامرتکب ہورہاہے، انہوں نے مطالبہ کیا ، مزدوروں کے مسائل ان کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں و ناانصافیوں کا فوری طور پر خاتمے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں اور طے شدہ معاہدے کے مطابق بھٹہ مزدوروں کو فی ہزار اینٹ کی اجرت 1110 روپے کے حساب سے ادا کی جائے تاکہ بھٹہ خشت پر کام کرنے والے محنت کش معاشی طور پر آسودہ ہو سکیں ۔

Leave a Reply

x

Check Also

دینہ جی ٹی روڈ پر شارٹ سرکٹ کے باعث پیڑول پمپ کے سٹور میں اچانک آگ بھڑک اُٹھی

دینہ (امجدسیٹھی) دینہ جی ٹی روڈ پر شارٹ سرکٹ کے باعث پیڑول پمپ کے سٹور ...

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow