ٹرمپ نے کانگریس اور یورپی اتحادیوں کو 120 دِن کی میعاد دی ہے، جس دوران وہ سمجھوتے میں بہتری لائیں یا پھر امریکہ کی جانب سے معاہدے سے الگ ہونے پر تیار ہوجائیں، اور نئے اقدام پر عمل درآمد شروع کیا ہے جس سے ایرانی کاروباری اداروں اور افراد کو ہدف بنایا جائے گا

ٹرمپ نے ایران کے خلاف نئی تعزیرات کی منظوری دے دی: اہل کار

صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعے کے روز ایران کے خلاف نئی تعزیرات کی منظوری دی، جب کہ ایران کے خلاف از سر نو تیسری بار سخت پابندیاں عائد نہیں کیں، جس کا مقصد جوہری ہتھیاروں کی تحقیق ختم کرانا ہے۔ یہ بات انتظامیہ کے ایک اعلیٰ اہل کار نے بتائی ہے۔

ٹرمپ نے کانگریس اور یورپی اتحادیوں کو 120 دِن کی میعاد دی ہے، جس دوران وہ سمجھوتے میں بہتری لائیں یا پھر امریکہ کی جانب سے معاہدے سے الگ ہونے پر تیار ہوجائیں، اور نئے اقدام پر عمل درآمد شروع کیا ہے جس سے ایرانی کاروباری اداروں اور افراد کو ہدف بنایا جائے گا۔

انتظامیہ کے اہل کار نے کہا ہے کہ یہ تعزیرات اُس بڑی کوشش کا ایک حصہ ہے تاکہ ایران کی ’’لاپرواہ‘‘ اور ’’عدم استحکام پیدا کرنے والے رویے‘‘ کا تدارک کیا جاسکے، جن میں احتجاج کرنے والے مظاہرین کے خلاف سخت کارروائی سے متعلق اقدام شامل ہے جس میں کم از کم 21 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اہل کار کے الفاظ میں ’’امریکہ خاموش نہیں بیٹھے گا جب ایرانی حکومت انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں اور ناانصافی میں ملوث ہو رہی ہو۔ اپنے ہی شہریوں کے ساتھ ظلم و ستم کے جرم پر، ہم ایرانی حکومت کے سربراہ کو ہدف بنا رہے ہیں، جس میں ایران کی عدلیہ کے سربراہ بھی شامل ہیں‘‘۔

اہل نے مزید کہا کہ ’’اُن افراد کو بھی قید کیا گیا ہے جو پُرامن اجتماع کی آزادی کے حق کا استعمال کر رہے تھے؛ جب کہ وہ لوگ جو حکومت مخالف احتجاج کرتے ہیں اُنھیں بھی نشانہ بنایا جاتا ہے‘‘۔

Leave a Reply

x

Check Also

حکومتِ امریکہ کو ’شٹ ڈاؤن‘ کا خدشہ لاحق

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعرات کے روز کہا ہے کہ سرکاری کاروبار میں جزوی خلل ’’پڑ سکتا ہے‘‘، جو 2013ء کے بعد پہلا ’شٹ ڈاؤن‘ ہوگا

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow