نظریاتی ، خیراتی، حادثاتی اور نفسیاتی۔تحریر۔شہبازبٹ

پاکستان تحریک انصاف جہلم میں ’’سابق ضلع ناظم‘‘ چوہدری فرخ الطاف کی شمولیت کے بعد نظریات خیرات حادثات اور نفسیات کا شکار ہو چکی ہے روز بروز نئی کہانیاں پرانے کھلاڑیوں کی زبانی سامنے آرہی ہیں اکیس ستمبر کے لدھڑ اور دینہ میں جلسوں کے بعد پاکستان تحریک انصاف میں دو دھڑے کھل کر آمنے سامنے آ چکے ہیں منافقت اور مفادات کھل کر سامنے آرہے ہیں چند ماہ قبل وہ چہرے جو کبھی لدھڑ کبھی سابق ضلع ناظم کے پٹرول پمپ اور کبھی چوہدری فواد حسین کے دفتر میں دکھائی دیتے اور ان کی تعریفوں کے پل باندھتے دکھائی دیتے تھے سرے عام چوہدری ثقلین ،چوہدری زاہد اختر اور پھلائیاں خاندان کے افراد کو تنقید کا نشانہ بناتے تھے آج کل انہی کے چرنوں میں بیٹھ کر لدھڑ خاندان پر تنقید کے نشتر چلاتے ہیں۔
اب اگر حلقہ این اے63کا مختصر جائزہ لیا جائے تو ضمنی الیکشن میں چوہدری فواد حسین نے 73ہزار ووٹ حاصل کیے اس وقت بھی اپنے آپ کو نظریاتی کہلانے والے چند رہنما پی ٹی آئی امیدوار کی مخالفت کرتے رہے اور آج بھی وہی گروپ وہی دھڑا لدھڑ خاندان کی مخالفت کررہاہے اب ان میں تین چار لوگ ایسے ہیں جو ضمنی الیکشن میں پی ٹی آئی کے ساتھ تھے اور فواد چوہدری کے حق میں کمال کا بولتے تھے جن کے ویڈیو ثبوت اور اخبارات کے تراشے آج بھی سوشل میڈیا پر گردش کررہے ہیں ایسے کیوں ہورہاہے سب جانتے ہیں مفادات کی جنگ ہے آج چند افراد کو ٹکٹ کا لالی پاپ دیا جائے تو دوباہ لدھڑ خاندان کے گیت گانا شروع کردینگے۔اگر بات کی جائے نظریات کی تو پی ٹی آئی میں کون اور کتنے نظریاتی ہیں یہ سب جانتے ہیں پی ٹی آئی میں نظریاتی وہ ہیں جن کو عہدوں اور ٹکٹوں کی لالچ نہیں وہ ملک میں تبدیلی اور عمران خان کو وزیراعظم دیکھنا چاہتے ہیں ملک سے کرپشن اور ناانصافی کے خاتمہ کیلئے پی ٹی آئی میں آئے اور ان میں زیادہ تعداد نوجوانوں کی ہے وہ نوجوان کسی دھڑے یا گروپ بندی کاش کار نہیں ہوئے عمران خان نے جس کو ٹکٹ دیا اس کی مہم بھی چلائی اور ووٹ بھی دیئے ایسے کئی چہرے گزشتہ عام انتخابات میں سامنے آئے جو کبھی گھروں سے نکلتے ہی نہیں تھے اور عمران خان کیلئے بینرز پوسٹرز فلیکسز بنواتے دکھائی دیئے۔
اب بات چونکہ نظریات کی ہورہی ہے تو پی ٹی آئی جہلم کے ان تمام لیڈران پر نظر ڈالوں جو آج ایک دوسرے پر الزامات کی بارش کررہے ہیں تو بہت سارے ایسے ہیں جو ماضی قریب میں چوہدری فرخ الطاف کو سیاسی پیر کا درجہ دیتے تھے جی ہاں وہ ہی فرخ الطاف جو ضلع ناظم تھا اور اس کے نام پر دیہاڑیاں لگاتے تھے بہت سارے ایسے ہیں جو تیر کھانے کے بعد سائیکل پر سوار ہوئے سائیکل پنکچر ہونے کے بعد کچھ شیر کا شکار ہو کر ن لیگ کے اسٹیج پر جلوہ افروز ہوئے کچھ نے تو آزاد امیدوار کے طور پر بھی اپنا قد کاٹھ چیک کیا پی ٹی آئی کے پاس چونکہ میدان خالی تھا اس لیے جو جو آتا گیا اس کے ہاتھ میں بلا تھما دیاگیا اور پھر یوں
ہوا کہ حادثاتی نظریاتی میں تبدل ہونے لگے۔
بہت سارے ایسے نظریاتی بھی ہیں جو گزشتہ پندرہ سولہ سالوں میں تین تین پارٹیاں بدلنے کے بعد پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہوئے اور اب جب سابق ضلع ناظم نے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی ہے تو بہت سارے نظریاتی نفسیات کی جنگ چل رہی ہے کچھ کا خیال ہے انہیں خیراتی طور پر پی ٹی آئی کا ٹکٹ ملے اور وہ ڈائریکٹ سینٹ میں پہنچ جائیں کچھ کی خواہش ہے انہیں قومی اسمبلی کا ٹکٹ ملے اور کچھ صوبائی اسمبلی کیلئے خواہش مند ہیں نظریاتی خاموش اور پریشان ہیں کہ ہو کیا رہا ہے بہرحال بہت سارے لوگ پی ٹی آئی میں ایسے ہیں جو نفسیات کا شکار ہو چکے ہیں اب صورتحال یہ ہے کہ بالفرض جن کو پی ٹی آئی کا ٹکٹ نہیں ملتا وہ لدھڑ جائیں گے؟ میرے خیال میں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ق)کے علاوہ ان کے پاس کوئی ’’آپشن‘‘(Option)نہیں ہے اور دوسرا یہ کہ کیا پی ٹی آئی کا نظریاتی ووٹر کسی حادثاتی خیراتی یا نفسیاتی کو ووٹ دیگا یا پھر ان کے کہنے پر بلے کے مقابلے میں کسی دوسرے نشان پر مہر لگائے گا میرے خیال میں ایسے بھی نہیں ہوگا مقابلہ بیٹ اور شیر کا ہوگا جس کے پاس ٹکٹ ہوگا نظریاتی کارکن اسی کو ووٹ دینگے جیسا کہ2013ء کے الیکشن میں ایسے ایسے امیدواروں کو ہزاروں ووٹ پڑے جن کی بات گھر میں کوئی نہیں سنتا لیکن پی ٹی آئی کے باہمی اختلافات اور دھڑے بندی سے مسلم لیگ ن کو فائدہ پہنچ سکتا ہے ایسے حالات میں جہاں پی ٹی آئی جہلم میں سرے عام ایک دوسرے کے خلاف الزامات کی گولہ باری ہورہی ہے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان اور نارتھ پنجاب کی قیادت کی خاموشی سوالیہ نشان ہے اگر ایسے حالات میں چیئرمین پی ٹی آئی نے سخت فیصلے نہ کیے تو پھر پی ٹی آئی کے ورکرز بھی نظریاتی کے بجائے نفسیاتی بن جائیں گے۔
صورتحال مسلم لیگ ن کی بھی کچھ اسی طرح کی ہے لیکن فی الحال خاموش ہے الیکشن قریب آتے ہی مسلم لیگ ن کے نظریاتی بھی کھل کر سامنے آ جائینگے۔

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow